ننھا حاجی چل بسا 30

ننھا حاجی چل بسا

تحریر شئیر کریں

ننھا حاجی چل بساایک دردناک واقعہ

13 جون 2024 کو مصر سے آنے والا ننھا حاجی جو کہ اس سال آںے والے حاجیوں میں سب سے کم عمر تھا چل بسا انا للہ وانا الیہ راجعون ،انتہائی دلخراش واقع ہے
بتایا جا رہا ہے بچے کی عمر صرف دو سال تھی اور وہ سعودیہ کا گرم موسم برداشت نا کر سکا اور وفات پا گیا۔

بچے کی موت اس کے والدین ہی نہیں اہل خانہ اور حج پہ آئے ہوئے حاضیوں کے لئے صدمے کا باعث ہے۔اہل خانہ نے میڈیا کو بتایا کہ بچے کی طبیعت اچانک بگڑ گئی اور اسے طبی امداد دی گئ مگر وہ جانبرنا ہوسکا۔

سعودی حکومت نے عازمین حج کے لئے تمام ضروری طبی سہلولیات کاانتظام کر رکھا ہے مختلف موبائل ہسپتال طبی مراکز قائم کیے جاتے ہیں تاکہ کسی بھی ایمرجنسی کی صورت میں طبی امداد فراہم کی جا سکے۔اس بچے اور اہل خانہ کے لئے خصوصی دعائیں ہیں اور اس بچے کی موت یاددہانی ہے کہ موت کبھی بھی اور کسی بھی وقت آ سکتی ہے اس لئے اس کے لئے ہر وقت تیاری رکھنے چاہئے۔

ننھا حاجی چل بسا آپ نے پڑھا کیسا لگا؟

تمام حاجیوں سے التماس ہے کہ حج کے دوران اپنی صحت کا خصوصی خیال رکھیں اور پانی کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں