99

آپ کی ہار دیانت دار

تحریر شئیر کریں

اب کی بار دیانت دار بلدیاتی انتخابات سن سن کر عوام تنگ ہو گئے ہیں اور پریشانی سے دوچار ہیں ۔ بار بار ملتوی کر کے عوام کو مایوس کیا گیا ہے ۔ لیکن عوام چاہتے ہیں کہ اب الیکشن ہو جانا چاہئے
پر حکومت بلکل بھی نہیں چاہتے مگر کیوں؟ انتخابات کروائیں جائیں جوکہ کراچی شہر کے لئیے بنیادی ضرورت ہے ۔
ہمارے حکمرانوں نے کراچی شہر کو اندھیرے میں ڈوبا دیا گیا ہے۔کراچی روشنیوں کا بہترین شہر کہلاتا تھا، بلدیاتی کارکردگی بلکل ٹھیک نا ہونے کے وجہ سے تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا گیا ہے۔ بلدیاتی نظام بہتر بنانے کی فوری ضرورت ہے۔ کیونکہ انتخابات کے ذریعے خوف خدا رکھنے والے ایمان دار اور کرپشن سے پاک افراد کو منتخب کیا جائے۔ بلدیاتی نظام بہترین طریقے سے چلائے گے تو کراچی شہر دوبارہ روشنیوں کے شہر بنانے میں کامیاب ہونگے انشاءاللہ

شہریوں کے پریشانی دور کرے ، کچرا کنٹی کو صاف ستھرا کرے ، ٹوٹی پوٹی کھنڈرات بنے ہوئے سڑکوں کی تعمیر کرے ، عوام کو ہر قسم کی سہولت فراہم کرے ، پر سکون ماحول پیدا کرے ۔۔۔۔عوام کو دین اسلام کے مطابق بہترین طریقے سے محفوظ زندگی فراہم کر سکے

بلدیاتی انتخابات میں منتخب نمائندے عوام کے خدمات انجام دے کر ملک کی ترقی و تعمیر کیلئے جان و مال نچھاور کرتے ہیں۔ ” حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کا قول ہے کہ اس ملک میں ایک بکری کا بچہ بھی بھوکا پیاسا مرجائےگے تو اللہ رب العالمین عمر سے پوچھا جائے گا ۔ ” حکومت چلانا آسان کام نہیں ہے ۔ جیسے چاہو اپنا مرضی سے نہیں بلکہ” اللہ تعالٰی کے قانون کے مطابق بہترین طریقے سے چلانے کی ضرورت ہے ۔”
جناب میئر نعمت اللہ خان صاحب ( مرحوم ) کو سب لوگ دیکھ چکے ہے ۔ چار سال کے عرصے میں کراچی کو کس طرح ترقی اور تعمیر میں آگے بڑھا دیا تھا۔


پر سکون ماحول فراہم کیا گیا تھا۔ کراچی شہر کو اندھیرے سے نکالنے میں کامیاب ہوگئے،چمکتا ہوا روشنیوں کا ہریالی شہر بنا کر دکھا دیا تھا۔اب بھی وقت ہے۔ الخدمت جماعت اسلامی پاکستان کے کارکردگی عوام کے سامنے ہیں۔عوام کو دھوکہ دینے والے اور اپنے منپسند لوگوں کو بلکل بھی نہیں ووٹ دینا ہے بلکہ دیانت دار اور دین دار لوگوں کو منتخب کیجیے ۔ووٹ ایک امانت ہے ۔ اللہ تعالٰی کو بھی جواب دینا ہے۔ اس شہر کے انتظامات ذاتی مفاد کو اہمیت رکھنے والے نہیں چلا سکتے ۔ نعمت اللہ خان صاحب کی شاگرد ( حافظ نعیم ارحمان ) کو منتخب کیجیے ۔


الخدمت جماعت اسلامی پاکستان کے پاس ہر مسائل کا حل موجود ہیں ۔ وہ تو ہر موقعے پر ہر کام کرنے کیلئے تیار ہیں ۔ صرف وہی عوامی دوست ہیں۔ اب مجھے اور آپ کو سوچنا ہوگا کہ میں کس کا حق میں اپنا گواہی پیش کروں ! ہاں میں تو اب کراچی شہر کو لاوارث نہیں وارث بنائیں گے۔ میں تو نااہل افراد کو ووٹ نہیں دوں گی بلکہ قرآن و سنت کے مطابق حق کا گواہی پیش کروں گی، مجھے تو حافظ نعیم ارحمان کو ووٹ دے کر میئر بنانا ہے، ہاں ! صرف میں نہیں میرے گھر والوں اور رشتہ داروں کو بھی ضرور ترازو پر مہر لگا کر کامیاب بنائیں گے انشاءاللہ۔۔۔۔۔ اب سوچنا نہیں۔۔۔۔۔ لگائے ٹپہ ترازو پر
جیتے گا بھئی جیتے گا
اس بار ترازو جیتے گا

                   

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں