168

عیدالفطر تعارف و اہمیت و تاریخ

تحریر شئیر کریں

عیدالفطر تعارف و اہمیت و تاریخ

عیدالفطر کا تعارف


عیدالفطر کیا ہے؟اور اس کے کیا معنی ہیں؟عید کا مطلب ہے لوٹ کر آنا”اس کا مادہ “ع ود مطلب بار بار آنے والی ،عید چونکہ ہر سال آتی ہے تو اس لیے اسے عید کہا جاتا ہے۔اس کا ایک مطلب گھروں سے باہر آنا بھی ہے چونکہ عید کی نماز کے لیے لوگ گھروں سے باہر آتے ہیں اس لیے اسے یہ نام دیا گیا ہے ۔جبکہ فطر سے مراد ہے آزاد ہونا اور کھولنا چونکہ عید الفطر کے موقع پر ماہ رمضان کی پابندیوں سے آزاد ہوا جاتا ہے اس لیے اسے یہ نام دیا گیا۔فطر فطرانے سے ہے اس لیے اسے عیدالفطر بھی کہا جاتا ہے۔

عیدا الفطر کی تاریخ

تاریخی اعتبار سے دیکھیں تو جس دن حضرت آدم علیہ السلام کی توبہ قبول ہوئی اس لیے اسے عید کے طور پر منایا گیا،اسی طرح حضرت یونس علیہ السام جب مچھلی کے پیٹ سے باہر آئے تو یہ دن بھی عید کے طور ہر منایاگیا، اسی طرح حضرت موسی علیہ السلام پر جب مائدہ دسترخوان کا نزول ہوا تو اسے عید کے دن کے طور پر منایا گیا۔مسلمانوں میں عید کا تصور دیگر اقوام سے مختلف ہے پورا ایک ماہ اللہ کی عبادت کے لیے مختص کر دیا گیا اور اس کے اینڈ پہ ایک دن رکھا گیا جس دن کو عید کا نام دیا گیا۔

عیدالفطر کی اہمیت

اسلام میں عید کا تصور بہت اہمیت کا حامل ہے اس دن کو خوشی کے طور پر منایا جاتا ہے مگر عید تو اسی کی ہے جس سے اللہ راضی ہوگیا اور اسے جہنم کی آگ سے آزاد کر دیا گیا۔عید تو اسی کی ہے جسے تقوی عطا کر دیا گیا۔عید تو اسی کی ہے جس بے اپبے نفس پہ کنٹرول پانا سیکھ لیا،معذرت کے ساتھ ہمارے ہاں عید کھانا پینا اور نئے کپڑے پہننے کی حد تک رہ گئ جو کہ اس کی اصل روح کے خلاف ہے۔ہمارے ہاں چاند رات اورعید کا تصور جتنا اچھا ہے اسے اتنا ہی بگارڈ دیا گیا ہے۔عیدالفطر کے موقع پر کیا ہو رہا ہے اور کیا کرنا چاہیے اس پہ بھی اگر گوگل اور چیٹ جی پی ٹی سے مدد لے لی جائے تو بہت اچھا ہے۔

نماز عیدالفطر کی تکبیرات

عیدا لفطر کی نماز چھ زائد تکبیروں کے ساتھ پڑھی جاتی ہے واضح رہے اس نماز پر وہی احکامات لاگو ہوتے ہیں جو جمعہ کی نماز ہر ہیں مثلا یہ باجماعت پڑھی جاتی ہے گھر میں ادا نہیں کی جا سکتی الا۔یہ کہ کوئی ایمرجینسی صورت حال یو جیسا کہ کووڈ میں ہو تھا۔
تقبل اللہ منی و منکم

عیدالفطر تعارف و اہمیت و تاریخ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں