135

چائے کے فوائد اور نقصانات

تحریر شئیر کریں

چائے کے فوائد اور نقصانات

تمام دن کی مصروفیات کے بعد، چائے کی چسکیوں سے دم لینے کا لطف کچھ خاص ہوتا ہے۔ چائے دنیا کا سب سے مقبول مشروب ہے۔ 21 مئی، جو دن بین الاقوامی چائے کا دن ہے، ہمارے لئے ایک اچھا موقع فراہم کر رہا ہے کہ ہم چائے کے فوائد اور نقصانات پر غور کریں۔

چائے کے فوائد:

دماغی کارکردگی کو بہتر بناتی ہے:

چائے میں موجود کیفین دماغی تیزی کو بہتر بنانے کے لئے مددگار ثابت ہوتا ہے۔ یہ ذہنی توانائی کو بڑھاتا ہے اور توجہ کو مرکوز کرتا ہے۔

آنتوں کی صحت:

چائے میں موجود اینٹی اکسیدنٹس جیسے فلاونوئیڈز اور کیٹیچنز آنٹی آکٹیوز، آنتوں کو نقصان پہنچانے والے آزارناک ریڈیکلز سے بچاتے ہیں۔ یہ آنتوں کی صحت کو بہتر بناتے ہیں اور نظام ہاضمہ کو تقویت دیتے ہیں۔

صحت پر عمومی پر اثرات:

چائے قلبی صحت کے لیے مفید ہوتی ہے مگر ایک حد تک
یہ آنکھوں کی نظر کو بہتر بناتے ہیں اور آنکھوں کی عملی کاکردگی کو بہتر کرتے ہیں۔ چائے میں موجود کیٹیچنز آنٹی آکٹیوز ضد اکسیڈیٹنٹ خاصیت رکھتے ہیں جو جسم میں موجود ناپاک عناصر کے خلاف لڑتے ہیں۔ یہ اینٹی ایجنگ پروسس کو مزید تیز کرتے ہیں اور جسم کو آزاد ریڈیکلز کے نقصانات سے بچاتے ہیں۔

چائے کے نقصانات:
چائے کے جہاں فوائد ہیں وہی نقصانات بھی ہیں۔

کیفین کا استعمال:

چائے میں موجود کیفین، جو چائے کی پودے کا طبیعی جزو ہے، میں محدود مقدار میں پایا جاتا ہے۔ لیکن زیادہ مقدار میں چائے پینے سے کیفین کی تعداد بڑھ سکتی ہے جو اگر زیادہ لی جائے تو خواب کی تشویش، تناو، اور بے چینی سمیت دیگر نقصانات کا باعث بن سکتا ہے۔

ہائی کافیئن چائے: کچی پتیوں والی چائے میں عموماً زیادہ کافیئن پایا جاتا ہے۔ اگر کسی شخص کو کافیئن کی بلوکی مشکل ہوتی ہے یا اگر وہ حاملہ ہو تو حمل گرنے کے امکانات بڑھ سکتے ہیں۔

نظام ہاضمہ کے لئے تشویش کا باعث:

چائے میں موجود مادہ کیفین، بعض افراد کے لئے نظام ہاضمہ کو تکلیف دے سکتا ہے۔ زیادہ مقدار میں چائے پینے سے ، گیس، اور اسہال کی شکایات ہوسکتی ہیں۔

نیند میں مشکلات:

چائے میں موجود کیفین جسم کو تحریک کردیتا ہے اور خواب کی کوالٹی کو متاثر کر سکتا ہے۔ زیادہ کیفین استعمال کرنے والے افراد کو نیند کی مشکلات، خواب کی تشویش، اور بےقراری کی شکایات ہوسکتی ہیں۔
زیادہ مقدار میں چائے پینے سے اضطراب، تنش، اور تشنج کی شکایات ہوسکتی ہیں۔

ہائی بلڈ پریشر: بعض افراد کو چائے میں موجود کیفین کے باعث بلڈ پریشر کی شکایات ہوسکتی ہیں۔ زیادہ کیفین کا استعمال بلڈ پریشر کو بڑھا سکتا ہے اور قلبی مسائل کا خطرہ بڑھا سکتا ہے۔

ایک دن میں کتنے کپ چائے پینا چاہیے؟
ایک دن میں 3 کب سے زیادہ نہیں پینے چاہیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں