40

رزق میں کشادگی کی دعائیں

تحریر شئیر کریں

رزق میں کشادگی کی دعائیں

اللَّهُمَّ اجْعَلْ أَوْسَعَ رِزْقِكَ عَلَيَّ عِنْدَ كِبَرِ سِنِّي وَانْقِطَاعِ عُمْرِي
اے الله! مجھ پر میرے بڑھاپے کے قریب اور میری عمر کے خاتمے تک اپنا رزق کشادہ رکھنا۔
بڑھاپے میں ہر طرح کی محتاجی سے بچانا یا رب، جسمانی ہی نہیں، جذباتی اور مالی محتاجی سے بھی۔ اپنا رزق کشادہ رکھنا، صرف مال ہی نہیں، محبتیں بھی رزق ہیں۔ محبت کرنے والے بھی رزق ہیں۔ ہمارا دامن بھرے رکھنا۔

اَللّٰھُمَّ، اکْفِنِیْ بِحَلَالِِکَ عَنْ حَرَامِکَ، وَاَغْنِنِیْ بِفَضْلِکَ عَمَّنْ سِوَاکَ
اللہ! حلال، طیب اور جائز سے ہمیں اتنا پُر رکھیں کہ حرام کے دروازے ہی نہ کھلیں۔ صرف خوراک ہی حلال نہیں، رزق بھی۔ دوستیاں اور رشتے بھی۔ محبت اور توجہ بھی۔ سننے کا مواد بھی۔ کہنے کی باتیں بھی۔ دیکھنے کی چیزیں بھی۔ جانے کی جگہیں بھی۔ دل، دماغ، جسم اور روح بھی۔

اللَّهُمَ قَنِّعْنِي بِمَا رَزَقْتَنِي، وَبَارِكْ لي فِيهِ، وَاخْلُفْ عَلَيَّ كُلَّ غَائِبَةٍ لِي بِخَيْرٍ
يا الله! آپ نے مجھے جوکچھ عطا فرمایا اس پر مجھے قناعت عطا فرما اور اس میں برکت ڈال دے اور جو چیز میرے پاس نہیں، اس کی خواہش میرے دل سے نکال دے۔ اس کے بدلے مجھے اپنے پاس سے اس سے زیادہ بھلائی کی چیز عطا فرما۔

اَللّٰھُمَّ اِنِّیْٓ اَسْئَلُکَ عِلْمًا نَافِعًا وَّرِزْقًا طَیِّبًا وَّعَمَلًا مُّتَقَبَّلًا
ڈرامے، موویز، اور اس سے بڑھ کر جادو ٹونے جیسا علم۔۔ اے اللہ! آپ ایسے علم کو ہم سے دور رکھیے۔ اور علم تو یہ بھی ہے کہ کس سپر سٹار کی زندگی میں کیا ہو رہا ہے، بلکہ سپر سٹار ہی کیا، ہمیں تو ہم جیسے لوگوں کی زندگی کے بند کواڑ کھولنے کا بہت شوق ہے۔ اللہ تعالٰی! یہ تجسس، یہ طلب ہم سے لے لیجیے۔ ہمیں بس نفع بخش علم دیں۔ ہمیں سیکھنے والا بنا دیں اور پھر اس پر اچھی نیت کے ساتھ عمل کرنے والا بنائیں۔ ایسا علم جو اپنے اندر نافع ہو، اور اس پر عمل کرنا نفع بخش ہو۔ اور جو بھی عمل ہم کریں، اسے ریا سے پاک کر دیں اور قبول کریں۔ علم اور عمل کے درمیان میں طیب رزق کی دعا ہے، گویا ایسا علم، ایسا عمل پاکیزہ رزق جیسا ہے، اس رزق کی ہم پر فراوانی رکھیے۔

‏اللَّهُمَّ زِدْنَا وَلاَ تَنْقُصْنَا وَأَكْرِمْنَا وَلاَ تُهِنَّا وَأَعْطِنَا وَلاَ تَحْرِمْنَا وَآثِرْنَا وَلاَ تُؤْثِرْ عَلَيْنَا وَأَرْضِنَا وَارْضَ عَنَّا
اے الله! ہمیں زیادہ دے اور کم نہ کر، ہمیں عزت دے اور ذلیل نہ کر، ہمیں عطا کر اور محروم نہ کر، ہمیں دوسروں پر مقدم کر اور ہم پر کسی کو مقدم نہ کر، ہمیں راضی کر اور ہم سے راضی ہو جا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں